Tabsara21-2019 - ھفت روزہ اھل حدیث

Breaking

Monday, May 20, 2019

Tabsara21-2019


تبصرۂ کتب

تبصرہ نگار: جناب حافظ محمد اسلم شاہدروی
نام کتاب:               رسول اللہe کا دسترخوان
سلسلہ تبلیغ نمبر:  475
ضخامت:  86 صفحات، میڈیم سائز
نام کتاب:               جنت میں لے جانے والے اعمال
سلسلہ تبلیغ نمبر:  453
ضخامت:  49 صفحات، میڈیم سائز
نام کتاب:               توبہ واستغفار کی برکات
سلسلہ تبلیغ نمبر:  455
ضخامت:  48 صفحات، میڈیم سائز
نام کتاب:               غیبت کے نقصانات‘ چغل خور کا انجام
سلسلہ تبلیغ نمبر:  454
ضخامت:  47 صفحات، میڈیم سائز
نام کتاب:               شکر کے فوائد وثمرات
سلسلہ تبلیغ نمبر:  458
ضخامت:  44 صفحات، میڈیم سائز
تبصرہ نگار:               جناب حافظ محمد اسلم شاہدرویؔ d
(معاون ناظم طبع وتالیف مرکزی جمعیت اہل حدیث پنجاب)
یہ پانچوں کتب ادارہ تبلیغ اسلام جام پور ضلع راجن پور کے رئیس جناب مولانا محمد یٰسین راہی نے مفت تقسیم کے لیے شائع کی ہیں۔ اسی ادارے کے مدیر جناب مولانا محمد اسماعیل ساجد نے انہیں تحریر کیا ہے اور بہت عمدگی سے مرتب فرمایا ہے۔
پہلی کتاب میں رسول اللہe کی کھانوں کے متعلق ہدایات اور فرامین ہیں۔ آپe کے ہاں کون سا کھانا پسندیدہ تھا؟ کھانوں میں سے کون سے مفید ہیں اور کن کن کھانوں سے کن حالات میں اجتناب کرنا چاہیے؟ نیز کھانے کے آداب‘ کھانا کھلانے کی فضیلت‘ دعوت طعام کا اہتمام اور اس میں بلائے جانے پر حاضری۔ اس طرح کے متعدد احکام اور شرعی آداب ہیں جو کھانے پینے کے متعلق ہمارے سامنے اسوۂ نبویہ پیش کرتے ہیں جسے ملحوظ رکھ کر ہم صحیح اور تندرست بھی رہیں گے اور عند اللہ ماجور بھی ہوں گے۔ یہ کتاب ہر گھر میں بڑوں کے ساتھ ساتھ بچوں کو ضرور پڑھنی چاہیے تا کہ کھانے پینے کے آداب معلوم ہوں۔
دوسری کتاب جنت میں لے جانے والے اعمال کی وضاحت کرتی ہے۔ قرآنی آیات اور احادیث مبارکہ سے ایسے دلائل تحریر کیے گئے ہیں جن پر جنت میں داخلے کا وعدہ کیا گیا ہے یا جہنم سے بچ جانے کا اشارہ کیا گیا ہے۔ تمام نیکیاں انسان اسی نقطۂ نظر سے کرتا ہے کہ وہ جنت میں داخلے کا حق دار بن جائے۔ اس کتابچہ میں بالخصوص ایسے اعمال کی طرف توجہ دلائی گئی ہے۔ اس میں بدنی اور جسمانی کے علاوہ بعض ایسی قولی عبادات مذکور ہیں جو ادائیگی میں نہایت آسان اور اجر کے اعتبار سے حصول جنت کا باعث ہیں۔ ایسے اعمال کو وردِ زبان بنا کر اللہ تعالیٰ کی جنت کے حصول کی کوشش کرنا چاہیے۔
تیسری کتاب میں توبہ واستغفار کا موضوع عمدگی سے نبھایا گیا ہے۔ اہل علم فرماتے ہیں: تمام گناہوں سے بندے کو توبہ کرنا چاہیے۔ جن گناہوں کا تعلق حقوق العباد سے ہے ان میں مظلوم افراد سے معافی بھی مانگنی چاہیے۔ اللہ تعالیٰ نے توبہ کا دروازہ بہت وسیع بنایا ہے اور اسے قیامت تک کھلا رکھا ہے۔ لہٰذا کسی بندے کو جس کے گناہ جتنے بھی ہوں توبہ کی قبولیت سے ناامید نہیں ہونا چاہیے۔
استغفار کا مطلب بخشش طلب کرنا ہے۔ اس پاکیزہ عمل سے انسانوں کے گناہ بھی معاف ہوتے ہیں اور تنگیاں بھی دور ہوتی ہیں۔ اس سے آسمان وزمین سے عموماً انسانوں کے لیے برکات کے دروازے کھلتے ہیں اور خصوصا افراد کے رزق میں برکت بھی ہوتی ہے‘ اس کتاب میں ان باتوں کا مفصل اور با دلائل تذکرہ کیا گیا ہے۔
چوتھی کتاب میں غیبت کے نقصانات اور چغل خور کا برا انجام بتایا گیا ہے۔ قرآن پاک میں ہے کہ غیبت والا گویا اپنے مردہ بھائی کا گوشت کھاتا ہے۔ غیبت کا مطلب ہے کہ آپ اپنے مسلمان بھائی کی وہ سچی بات کسی کو بتائیں جس کا بتانا اسے ناپسند ہو۔ اگر وہ بات جھوٹی ہے تو غیبت کے بجائے بہتان ہے۔ حدیث معراج میں ہے کہ غیبت کرنے والوں کے تانبے کے لمبے لمبے ناخن ہوں گے وہ ان سے اپنے چہروں اور جسموں کو نوچیں گے۔ ایک حدیث شریف کے مطابق غیبت انسان کے لیے عذاب قبر کا باعث بھی ہے۔ یہ مضمون اس کتابچہ میں عمدگی سے سمو دیا گیا ہے۔
پانچویں کتاب میں شکر کے فوائد اور ثمرات بتائے گئے ہیں کہ اللہ تعالیٰ شکر کرنے والوں پر راضی ہوتے ہیں۔ اللہ تعالیٰ شکر کرنے والوں کو مزید نعمتیں عطا فرماتے ہیں اور نا شکرے لوگوں پر اللہ ناراض ہوتے ہیں۔ حدیث شریف میں مروی ہے کہ وہ مومن بندہ اچھا ہے جسے نعمت ملے تو شکر کرے اور تکلیف آئے تو صبر کرے۔ شکر کے فضائل اور فوائد پر یہ کتاب نہایت مفید اور ضرور لائق مطالعہ ہے۔
ان کتب کے حصول کے لیے مولانا محمد اسماعیل ساجد کے ساتھ درج ذیل نمبر پر رابطہ کر کے مفت منگوائی جا سکتی ہیں: 0333-8556472

No comments:

Post a Comment