اخبار الجماعت 28-2019 - ھفت روزہ اھل حدیث

Breaking

Sunday, July 21, 2019

اخبار الجماعت 28-2019


اخبار الجماعت

تبدیلی کے نام پر حکومت عوام پر عذاب کی شکل میں مسلط ہو چکی ہے: پروفیسر ساجد میر
خان صاحب ماضی میں شہر بند کرنے کا اعلان کیا کرتے اور یوٹیلیٹی بلز نذر آتش کیا کرتے تھے۔ احتجاج کا یہ حق عوام سے نہیں چھینا جا سکتا۔
لاہور (   ) مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان کے سربراہ سینیٹر پروفیسر ساجد میر نے تاجروں کی طرف سے اعلان کردہ ہڑتال کی حمایت کردی۔ ہڑٹال جلسے اور جلوس جمہوری حق ہے، جسے ریاستی جبر کے ذریعے روکانہیں جاسکتا۔عمران خاں ماضی میں شہر بند کرنے کا اعلان کیا کرتے تھے اور  یہ بھی یاد رہے کہ وہ یوٹیلیٹی بلز نذر آتش کیا کرتے تھے۔ احتجاج کا یہ حق عوام سے نہیں چھینا جاسکتا۔اب تو ٹیکسوں کی بھرمار اور مہنگائی نے عوام کا جینا دوبھر کردیا ہے۔
اس امر کا اظہار انہوں نے کینیڈا سے مرکزی جمعیت اہل حدیث لاہور شہر کے امیر ڈاکٹر ریاض الرحمن یزدانی  سے ٹیلی فون پر گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ پروفیسر ساجد میر نے کہا کہ ٹیکس کے نام پر تاجروں اور چھوٹے دکانداروں کا گھیرا تنگ کیا جارہا ہے ۔ آئی ایم ایف کے مطالبے پر رواں ماہ گیس کی قیمت میں ۲۰۰  فیصد اوربجلی کی قیمت میں ۳۱ فیصد اضافے کے بعد اگست میں ایک بار پھربجلی کی قیمت میں اضافے کے آئی ایم ایف کے مطالبے پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے پروفیسر ساجد میر کا کہنا تھا کہ تبدیلی کی دعویدارموجودہ حکومت کی جانب سے گزشتہ ۱۰ ماہ میں بجلی،گیس، پیٹرول، دوائوں اور خورد نوش کی اشیا پر ٹیکسوں کی بھرمار اور قیمتوں میں اضافے کی وجہ سے عام آدمی کا جینا دوبھر کردیا گیا ہے۔  انہوں نے ایک بیان میں مزید کہا کہ ڈالر کو بے لگام اور موجودہ دور کی ایسٹ انڈیا کمپنی آئی ایم ایف کی خواہشات کی تکمیل کے لیے ملک کو گروی اور عوام کو غلام بنایا جارہا ہے،احتساب کے ا داروں کو متنازع بناکرملک کی جڑیں کھوکھلی کی جارہی ہیں ۔حکومت  عوام کو کسی قسم کا بھی ریلیف فراہم کرنے کے بجائے ہر روز مہنگائی  کے بم گرا رہی ہے۔ ۵۰ لاکھ گھر، ۲ کروڑ نوکریاں اور بیرون ملک لوٹی ہوئی دولت کی واپسی کے تمام دعوے جھوٹ کا پلندا ثابت ہوئے ہیں۔ پی ٹی آئی حکومت تبدیلی کے نام پر ملک اور عوام پر عذاب کی شکل میں مسلط ہوچکی ہے۔
المطبعۃ العربیۃ کے مالک جناب میاں خالد صاحب وفات پا گئے
16 جولائی لاہور… العربیہ پریس کے مالک میاں خالد صاحب جو کہ طویل عرصہ سے مختلف عوارض میں مبتلا اور ہسپتال میں داخل تھے‘ 16 جولائی بروز منگل اللہ کو پیارے ہو گئے۔ انا للہ وانا الیہ راجعون! مرحوم با اخلاق‘ ملنسار‘ ہر دلعزیز اور بے شمار خوبیوں کے مالک تھے۔ ان کی وفات کی خبر ملنے پر مرکز اہل حدیث سے ناظم مالیات جناب حاجی عبدالرزاق صاحب‘ محمد عمران مجاہد‘ عتیق الرحمن‘ محمد طارق چوہان‘ عبدالمنان واہلہ اور میاں عبداللہ بخش پر مشتمل ایک وفد ان کی رہائش گاہ پہنچا۔ مسلسل بارش کے باوجود کثیر تعداد میں احباب موجود تھے۔ کوٹ خواجہ سعید میں ساڑھے گیارہ بجے نماز جنازہ ادا کی گئی۔ جنازہ کی ادائیگی کے بعد مقامی قبرستان میں سپرد خاک کر دیا گیا۔ اس موقع پر وفد نے مرحوم کے بیٹوں میاں آصف اور میاں طاہر سے اظہار تعزیت کے ساتھ مرحوم کے لیے دعائے مغفرت اور جملہ لواحقین کے لیے صبر جمیل کی دعا کی۔ دعا ہے کہ رب ذوالجلال مرحوم کی بشری خطائیں معاف فرما کر جنت الفردوس عطا فرمائے۔ قارئین کرام میاں صاحب مرحوم کی مغفرت تامہ کے لیے خصوصی دعا فرمائیں۔ (ادارہ)
اہل حدیث یوتھ فورس کی تبلیغی کمیٹی کا اجلاس
تبلیغی کمیٹی اہل حدیث یوتھ فورس پاکستان کا اجلاس 7 جولائی بروز اتوار مرکز 106 راوی روڈ لاہور میں منعقد ہوا۔ اجلاس کی صدارت چیئرمین تبلیغی کمیٹی قاری الیاس سیالکوٹی نے کی‘ مہمان خصوصی جناب سلمان اعظم صاحب تھے۔ اجلاس میں ماہِ اکتوبر ختم نبوت کے طور پر منانے کا فیصلہ کیا گیا۔ یہ بھی فیصلہ کیا گیا کہ ماہ اکتوبر میں ہونے والی تینوں ختم نبوت کانفرنسوں کی تیاری کے لیے نوخیز خطباء قافلوں کی شکل میں گھر گھر جائیں گے اور عوام الناس کو اس کی بھر پور دعوت دیں گے۔ حافظ سلمان اعظم نے تبلیغی کمیٹی کے تمام اراکین کی تبلیغی سرگرمیوں کو سراہا اور کہا کہ قاری الیاس سیالکوٹی کی زیر صدارت قافلوں کو ہری پور ہزارہ‘ رحیم یار خاں اور شہر قصور کی جانب تبلیغ کے لیے روانہ کیا جائے گا۔ اجلاس میں جناب احسان اللہ مجاہد‘ محمد وقاص شیرازی‘ اجمل شاکر‘ سلیمان یزدانی‘ سمیع اللہ ساجد‘ انعام الحق فاروقی‘ محمد حسین مدنی‘ حسین قاسمی‘ ذیشان مدنی‘ وقاص فاروقی‘ عبدالعظیم ربانی‘ عثمان اسلم‘ عبدالرؤف ربانی‘ سلیم اللہ مدنی‘ مظہر شہزاد سلفی‘ زبیر حیدر‘ قاری عثمان اظہر‘ جمیل الرحمن رحمانی‘ مولانا عثمان ف اروقی‘ امجد جاوید صدیقی سمیت کئی احباب نے شرکت کی۔
اکتوبر کو ماہِ ختم نبوت کے طور پر منانے کا فیصلہ
لاہور … اہل حدیث یوتھ فورس پاکستان کی مرکزی کابینہ وعاملہ کا مشترکہ اجلاس مرکز اہل حدیث لاہور میں مرکزی صدر حافظ فیصل افضل شیخ کی زیر صدارت منعقد ہوا۔ اجلاس میں ماہ اکتوبر کو ’’ماہ ختم نبوت‘‘ کے طور پر منانے کا فیصلہ کیا گیا۔ اس سلسلے میں 15 اکتوبر کو ہری پور میں آل KPK‘ 19 اکتوبر کو رحیم یار خاں میں آل جنوبی پنجاب اور 26 اکتوبر کو کھڈیاں میں آل پنجاب ختم نبوت کانفرنسز کروانے کا بھی فیصلہ کیا گیا۔ کابینہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے صدر اہل حدیث یوتھ فورس حافظ فیصل افضل شیخ نے کہا کہ صحابہ کرام کے تقدس‘ عقیدۂ ختم نبوت اور پاکستان کی نظریاتی شناخت کا تحفظ ہمارا مشن ہے۔ AYF مرکزی جمعیت اہل حدیث کی تحریک نفاذ اسلام کا ہراول دستہ ہے۔ ہم اکابرین کی قربانیوں کا تحفظ کریں گے۔ دریں اثناء اہل حدیث یوتھ فورس کے زیر اہتمام عظمت صحابہ سیمینار کا بھی اہتمام کیا گیا جس سے خطاب کرتے ہوئے سیکرٹری جنرل پروفیسر حافظ عامر عبدالوکیل صدیقی نے کہا کہ صحابہ کرام اس امت کے چنیدہ لوگ ہیں۔ اللہ تعالیٰ نے ان کی عظمت کا تذکرہ قرآن مجید میں کیا ہے‘ صحابہ کرام نے اپنے مال وجان ہی نہیں اپنی اولاد تک احکامات نبوت پر قربان کر دیں۔ انہیں بزدلی یا مال کے حریص ہونے کے طعنے دینا نہ صرف جہالت کی انتہا ہے بلکہ قرآنی آیات کا انکار بھی ہے۔ حافظ فیصل افضل شیخ نے کہا کہ صحابہ کی حرمت کے تحفظ کے لیے ہم ہر قربانی دینے کو تیار ہیں۔ اس موقع پر سینئر ناب صدر حافظ عبدالوحید بٹ‘ ڈپٹی سیکرٹری جنرل حافظ سلمان اعظم‘ صوبائی صدر حافظ سیف اللہ کمیر پوری‘ پروفیسر ڈاکٹر مطیع اللہ باجوہ اور دیگر ذمہ داران نے بھی خطاب کیا۔
مرکزی جمعیت اہل حدیث سٹی گوجرانوالہ کا ماہانہ مشاورتی اجلاس
مرکزی جمعیت اہلحدیث سٹی گوجرانوالہ کا ماہانہ مشاورتی اجلاس امیر شہر حضرت علامہ پروفیسر قاری محمد سعید کلیروی حفظہ اللہ کی زیر صدارت منعقد ہوا۔ اجلاس میں شدید بارش اور مختلف علاقوں میں ژالہ باری کے باوجود کثیر تعداد میں علماء وکارکنان نے شرکت کی۔ اجلاس میں شعبہ تبلیغ کو مزید متحرک فعال اور مؤثر بنانے کی ضرورت پر زور دیا گیا اور عزم کیا گیا کہ مبلغین کی ایک جماعت کو تیار کیا جائے جو شہر بھر میں تبلیغ دین کا فریضہ انجام دے۔ اجلاس میں عید الاضحی کے موقع پر غریب ونادار احباب جماعت کو عید کی خوشیوں میں شریک کرنے کیلئے اجتماعی قربانی کرنے کا فیصلہ بھی کیا گیا۔ اس سلسلے میں ایک کمیٹی تشکیل دی جائے گی جو یہ سارے انتظام کرے گی۔ اجلاس میں مرکزی جمعیت سٹی کے زیر اہتمام کسی پسماندہ علاقے میں فری ڈسپنسری کے قیام کا بھی فیصلہ کیا گیا اس پر جلد عملدرآمد کیے جانے کا بھی عزم کیا گیا۔ اجلاس میں شیخ الحدیث مولانا محمد رفیق سلفی‘ ممتاز عالم دین پروفیسر عبدالرزاق ساجد صاحب کی والدہ محترمہ‘ مولانا حافظ عباس راشد صاحب کی خواہر نسبی کی وفات پر گہرے رنج وغم کا اظہار کرتے ہوئے مرحومین کے لئے مغفرت اور پسماندگان کیلئے صبر جمیل کی دعا کی گئی۔ جبکہ بیمار علماء وکارکنان کیلئے دعائے صحت بھی کروائی گئی۔ اجلاس میں بعض دیگر تنظیمی امور بھی زیر بحث آئے۔
مرکز منہاج الاسلام اہل حدیث رحیم یار خاں کی تبلیغی سرگرمیاں
صوت القرآن برائے طالبات 2 تا 4 بجے سکول وکالج کی طالبات کے لیے 2 گھنٹے کا صوت القرآن کورس کا اہتمام کیا گیا جس میں طالبات کو قرآن مجید مکمل تجوید کے ساتھ پڑھنا سکھایا گیا۔ الحمد للہ! بہت زیادہ طالبات نے شوق سے کورس میں داخلہ لیا۔
تمام عمر کی خواتین کے لیے صبح 5 تا 8 بجے تک دورہ قرآن کریم بالتفسیر کا اہتمام کیا گیا۔ 20 شعبان تا 20 رمضان جس میں لا تعداد خواتین نے شرکت کی اور مکمل قرآن کا تفسیر کے ساتھ اسباق پڑھے جس میں ’’الہدیٰ‘‘ اسلامک سنٹر کی معلمات بھی گاہے گاہے تشریف لاتی رہیں مگر پورے قرآن کا د ورہ بالتفسیر بنت ثناء اللہ قصوری نے کرایا۔
20 رمضان المبارک کو تکمیل قرآن کی تقریب ہوئی جس میں الہدیٰ اسلامک سنٹر رحیم یار خان کی میڈم اسماء فہیم ودیگر معلمات نے خطابات فرمائے۔ بحمد اللہ تقریب ہر لحاظ سے کامیاب رہی‘ علاقہ سے سینکڑوں خواتین نے داخلہ لیا اور استفادہ کیا۔ (ہذا فضل ربنا)۔
مرکز ہذا میں امسال ما شاء اللہ 73 خواتین 26 مرد حضرات نے اعتکاف کیا جن کی تربیت کے لیے صبح وشام درس قرآن وحدیث کا انتظام تھا اور معتکفین کو روز مرہ کی مکمل دعائیں‘ نماز فرض‘ نماز جنازہ کی دعائیں اور طریقہ سکھایا گیا۔ سیرت النبیﷺ کے مختلف ابواب پڑھائے گئے۔ باقاعدہ ایک نصاب کے تحت 28 رمضان 29 رات کو ٹیسٹ (بصورت مقابلہ) ہوا جس میں 3 پوزیشن ہولڈرز کو انعامات سے نوازا گیا۔ الحمد للہ حمداً کثیراً۔ اس دوران 6 افراد مسلک اہل حدیث سے منسلک ہوئے۔
27ویں رات 18واں ’’عظمت قرآن اجتماع‘‘ منعقد ہوا۔  جس میں مولانا حافظ عبدالقہار محسن (سیالکوٹ) مولانا حافظ محمد سفیان ثوری (سادھوکی) کے خطابات ہوئے جبکہ تلاوت حافظ طلحہ زین العابدین قصوری اور نعت رسول مقبولﷺ حافظ عبدالحمید کمبوہ نے پیش کی۔ الحمد للہ! اجتماع نہایت ہی کامیاب رہا۔
حافظ ابوبکر عتیق (کویت) کی بدو ملہی آمد
جماعت کی معروف اورہردلعزیزشخصیت مولانا بشیرطیب مرحوم بدوملہی کی قدیمی اورمرکزی جامع مسجد قدس اہلحدیث میں جماعت کے معروف ادیب اورسکالرحافظ محمدابراہیم کمیرپوری کے چھوڑے ہوئے منبر ومحراب میں 1970ء سے 1976ء تک خطابت وامامت کے فرائض انجام دیتے رہے۔ مولانا محمدبشیرطیب مرحوم 1978ء میں کویت چلے گئے اور پھر وہیں کے ہوکررہ گئے پھر ۲۰۱۱ء میں اس جہان فانی سے رخصت ہو گئے۔ ان کے صاحبزادے حافظ ابوبکرعتیق مرکزی جمعیت اہل حدیث کویت کے سرگرم رہنماء ہیں اورکویت ہی میں خطابت کے فرائض اداکررہے ہیں۔ موصوف آج کل پاکستان آئے ہوئے ہیں۔ اپنی جنم بھومی اوراحباب جماعت کی محبت ان کوبدوملہی لے آئی۔ اپنے خصوصی تعلق کی بناء پروہ چوہدری بشیراحمدبشرملہی کے مہمان بنے۔ وہ انہیں نمازکی ادائیگی کے لیے مسجدقدس میں لے آئے اورنمازکے بعدمسجدمیں موجوداحباب سے ان کا تعارف کروایا۔ حافظ ابوبکرعتیق کے ساتھ ان کے بھائی حافظ ابوسفیان سلفی مدرس جامع محمدیہ گوجرانوالہ، حافظ ابوقنادہ ثانی ہیڈ ماسٹر گورنمنٹ پرائمری سکول واہگہ ،حافظ اابوعبیدہ کاظمی سٹوڈنٹ ایل ایل بی ،حافظ ابوہریرہ مدنی لیکچرارسپریئرکالج کامونکی اوران کے بہنوئی مولانا ادریس شاہدخطیب وامام کوٹلی نواب بھی آئے ہوئے تھے ملاقات اورتعارف کے وقت مرکزی جامع مسجداہلحدیث قدس بدوملہی کے خطیب قاری ساجد الرحمان ثانی ،خادم مسجد بائو افتخار احمد، چوہدری اخلاق احمد ملہی اور نذیر احمد اسد سندھو بھی موجود تھے۔ ملاقات میں مولانا بشیرطیب مرحوم کے ساتھ وابستہ یادوں کو دہرایا گیا۔ جماعتی زندگی کا ایک بڑالطف یہ ہے کہ مسلکی اورتنظیمی ساتھی جب بھی ملیں جہاں بھی ملیں اصلی رشتہ داروں جیسی لذت محسوس ہوتی ہے۔ اللہ تعالیٰ تمام اہل حدیث حضرات کو ذاتی اختلاف ختم کرکے ایک ہی نظم کے ساتھ رہنے کی توفیق عطا فرمائے۔ آمین!
اظہار تعزیت
گذشتہ دنوں مولانہ محمدنوازچیمہ کی والدہ، پروفیسر عبدالرزاق ساجد کی والدہ، تحصیل نارووال کے ناظم تبلیغ رانا خورشید احمد کے والد رانا نثار احمد، شیخ الحدیث مولانا محمدرفیق سلفی ،بدوملہی پریس کلب کے چیئرمین ناصرحکیم بھٹی کی پوتی اورقیصرندیم اکبرکی کمسن بیٹی قضائے الٰہی سے انتقال کرگئیں۔ اس سلسلہ میں ضلع نارووال کے امیرعبدالمجیدبٹ، ناظم نذیر احمد شبلی، امیرتحصیل ظفروال حافظ عبدالغفارریحان ،امیرتحصیل نارووال چوہدری شوکت علی مہیس، امیرسٹی بدوملہی محمدیونس بٹ، ناظم بدوملہی محمد یاسسر بھٹی، ممبر مجلس عاملہ پنجاب چوہدری بشیراحمدبشرملہی، اے وائی ایف کے سینئر نائب صدر عبدالوحید بٹ، تحصیل نارووال کے سیکرٹری جنرل حافظ محمدشہزادسلفی، اے وائی ایف سٹی بدوملہی کے صدر محمد شہباز بھٹی، سیکرٹری جنرل حسن فاروق سندھو اور نذیر احمد اسد نے مذکورہ وفیات پرپسماندگان کے ساتھ اظہار تعزیت کیا اورفوت شدگان کے لیے مغفرت اوربلندی درجات کی دعاکی۔
مولانا محمد رمضان قاسمی کو صدمہ:
جامع مسجد محمدی ومرکز اہل حدیث چک 119 سمانہ سرگودھا روڈ فیصل آباد کے مہتمم مولانا محمد رمضان قاسمی کی ہمشیرہ محترمہ 14 جولائی کو بجلی کا کرنٹ لگنے سے جاں بحق ہو گئیں۔ انا للہ وانا الیہ راجعون! مرحومہ پابند صوم وصلوٰۃ اور نیک خاتون تھیں۔ نماز جنازہ میں عزیز واقارب کے علاوہ جماعتی احباب کثیر تعداد میں شریک ہوئے۔ احباب سے ان کی مغفرت تامہ کے لیے دعا کی درخواست ہے۔
ڈاکٹر عبدالقادر گوندل کو صدمہ:
پروفیسر ڈاکٹر عبدالقادر گوندل انٹرنیشنل اسلامک یونیورسٹی اسلام آباد‘ ڈاکٹر عبدالغفار گوندل آفیسر پاکستان ایمبیسی الریاض‘ پروفیسر عبدالستار گوندل پاکستان ایمبیسی کالج الریاض کے چچا محترم حاجی عبدالرحمن گوندل 14 جولائی کو علالت کے بعد پیرانہ سالی میں انتقال کر گئے۔ انا للہ وانا الیہ راجعون! مرحوم پابند صوم وصلوٰۃ‘ شب بیدار اور انتہائی شریف النفس انسان تھے۔ ان کی نماز جنازہ آبائی گاؤں کوڑے کوٹ ضلع سرگودھا میں ادا کی گئی اور سوگواروں کی موجودگی میں مقامی قبرستان میں تدفین عمل میں آئی۔ دعا ہے کہ اللہ تعالیٰ مرحوم کی خطاؤں سے درگذر فرما کر اعلیٰ علیین میں مقام عطا فرمائے اور جملہ لواحقین کو صبر جمیل کی توفیق دے۔ آمین!

درخواست دعائے صحت
میرے والد گرامی دیپالپور تحصیل کے نائب امیر وناظم جامع مسجد فاروقیہ اہل حدیث استاذ الحفاظ قاری محمد یونس انجم حفظہ اللہ چند ایام قبل معدہ کی تکلیف میں مبتلا رہے۔ اب الحمد للہ کچھ بہتر ہیں اور ہسپتال سے گھر منتقل ہو چکے ہیں۔ ان کی اور مدیر اعلیٰ ہفت روزہ اہل حدیث بشیر احمد انصاری حفظہ اللہ سمیت دیگر تمام احباب کی مکمل صحت یابی کے لیے دعا کی اپیل ہے۔ جزاکم اللہ خیرا۔


No comments:

Post a Comment

View My Stats