اخبار الجماعت - ھفت روزہ اھل حدیث

تازہ ترین

Saturday, July 27, 2019

اخبار الجماعت


اخبار الجماعت

پاکستان میں فرقہ وارانہ فساد پھیلانے کی ہر کوشش ناکام بنا دی جائے گی۔ امیر محترم
مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان کے امیر سینیٹر پروفیسر ساجد میر نے کہا ہے کہ پاکستان میں فرقہ وارانہ فساد پھیلانے کی ہر کوشش ناکام دبنا دی جائے گی ۔ پاکستان کے علماء اور مذہبی جماعتیں متحد ہیں اوروہ ملکی سلامتی پر کوئی آنچ برداشت نہیں کرسکتے ۔ کراچی کے دور ے سے واپسی پر مرکز اہل حدیث میں کارکنوں سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ سری لنکا میں ہونے والے دہشت گرد ی کے واقعات قابل مذمت ہیں ۔ اسی طرح اورماڑہ میں ۱۴ پاکستانی فورسز کے جوانوںا ور کوئٹہ میں ہزارہ برادری کے افراد کاقتل عام بھی قابل مذمت ہے ۔ پروفیسر ساجد میر نے کہا کہ  اورماڑہ واقعہ میں ایرانی تنظیم کے ملوث ہونے کا معاملہ نہایت شرمناک اور افسوس ناک ہے ۔ شواہدبتاتے ہیں کہ بھارت اور ایران بلوچستان میں دہشت گردی کے ذمہ دارہیں۔ اور ماڑہ سانحہ کی ذمہ داری ایرانی تربیت یافتہ تنظیم بی آر آئی اے نے قبول کی ہے جس کے ٹریننگ،لاجسٹک کیمپ ایران کی سرحد کے پار واقع ہیں۔ اس واقعہ میں اسے بھارت کی معاونت بھی حاصل ہے۔ پروفیسر ساجد میر نے کہا کہ ایران کو اپنی سوچ اور طریقہ بدلنا ہو گا ۔مداخلت کی پالیسی ترک کرنا ہو گی۔ کوئی بھی پاکستانی اپنے ملک میں ایران سمیت کسی ملک کی مداخلت برداشت نہیں کرے گا ۔
نا اہل حکمران  بے وقت کی بارشیں‘ اللہ کے غضب اور ناراضگی کی علامتیں ہیں: امیر محترم
مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان کے امیر سینیٹر پروفیسر ساجد میر نے کہا ہے کہ نا اہل حکمران اور بے وقت کی بارشیں اللہ کے غضب اور ناراضگی کی علامتیں ہیں ، امت استغفار اور اخلاص عمل کی راہ کو اپنا کر رحمت الٰہی حاصل کر سکتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اللہ کی رحمت اُس کے غضب پر غالب ہے جبکہ رحمت الٰہی انبیاء کرام سمیت تمام مومنین کی نجات کا باعث ہے ، اعمال صالحہ اللہ کی رحمت کو متوجہ کرنے کے لئے کئے جاتے ہیں ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز جامع مسجد باب السلام گجر چوک منظور کالونی کراچی میں خطبہ جمعہ کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔  پروفیسر ساجد میر نے کہا کہ پاکستان پر اللہ کی خاص رحمت ہے ، متعدد ناکام تجربات اور مقتدر قوتوں کی طالع آزمائی اور لوٹ کھسوٹ کے با وجود پاکستان قائم و دائم ہے اور تا ابد قائم رہے گا ۔ انہوں نے کہا کہ وزارتوں کے سربراہوں کی تبدیلی سے حکومت کی نا اہلی واضح ہوتی ہے جس وزیر خزانہ کی صلاحیتوں کو آئیڈیل دکھایا گیا وہ ہی احمق اور نا اہل ثابت ہوا ۔ انہوں نے کہا کہ حکمرانوں کی نا اہلی نے ملکی معیشت کا جنازہ نکال دیا ہے ، مہنگائی نے ہر شعبے کو بُری طرح متاثر کیا ہے ۔  دریں اثناء مرکزی جمعیت اہل حدیث سندھ کے سیکریٹری اطلاعات حافظ شاہان احمد کے مطابق پرفیسر ساجد میر نے ۲۰ اپریل شام ۴ بجے کراچی پریس کلب میں ’’ میٹ دی پریس ‘‘ سے خطاب کیا جبکہ بعد نماز مغرب جامعۃ السلام السلفیہ شاہ لطیف ٹائون میں ’’سالانہ تقریب بخاری ‘‘ میں درس بخاری بھی دیا۔
سیدنا امیر معاویہ﷜ کی شخصیت حکمرانوں کے لیے مشعل راہ ہے: امیر محترم
مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان کے سربراہ سینیٹر پروفیسر ساجد میر نے کہا ہے کہ امیر معاویہ رضی اللہ عنہ کی شخصیت حکمرانوں کے لیے مشعل راہ ہے۔ وہ بہترین سیاسی‘ عسکری اور تنظیمی صلاحیتوں کے مالک تھے۔ اصحاب رسول کے بارے میں منفی باتوں کی اجازت نہیں دی جا سکتی۔ اس سے مذہبی منافرت پھیلتی ہے۔ ملک کو امن‘ سلامتی اور یکجہتی کی ضرورت ہے۔ مذہبی ہم آہنگی کے خلاف جو بھی اقدام ہو گا ہم اس کی مذمت کریں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے مرکزی جمعیت اہل حدیث لاہور شہر کے زیر اہتمام مرکز ۱۰۶ راوی روڈ میں شان امیر معاویہ رضی اللہ عنہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ پروفیسر ساجد میر نے کہا کہ جید ائمہ حدیث سے روایات ہیں کہ نبیu نے فرمایا: ’’اے اللہ! تو معاویہ کو ہادی اور مہدی بنا، اسے بھی ہدایت نصیب فرما اور اس کے ذریعے دوسروں کو بھی ہدایت عطا فرما۔‘‘ نیز اللہ کے رسولe نے دعا مانگی کہ ’’اے اللہ! معاویہ کو کتاب اور حساب کا علم عطا فرمااور اسے عذاب سے محفوظ فرما۔‘‘  انہوں نے کہا کہ انسانیت کی رہنمائی کے لیے قرآن کریم کو اوّلیت حاصل ہے۔ امیر معاویہt آپe کی موجودگی میں کلام اللہ کی کتابت فرمایا کرتے تھے۔ سیدنا امیر معاویہt نے غزوہ حنین میں نبی اقدسe کے ساتھ مل کر معرکہ لڑا۔ اللہ کے نبیe نے آپt کو ایک سو اونٹ اور ۴۰ اوقیہ چاندی بھی عنایت فرمائی۔ علامہ ابتسام الٰہی ظہیر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سیدنا امیر معاویہt کی حکمت عملی اور جوانمردی کے بیسیوں واقعات کتب تاریخ میں موجود ہیں۔ اپنی مدبرانہ سیاسی سوچ اور حکمت عملی کی بدولت آپ نے تقریباً ۶۴ لاکھ مربع میل پر حکمرانی کی۔ کئی ملکوں کے ملک ، شہروں کے شہر ،جزیروں کے جزیرے ، قلعوں کے قلعے اور علاقوں کے علاقے آپ کے دور میں فتح ہوئے اور وہاں اسلامی ریاست کو فروغ دیا گیاجن میں صرف چند نام یہ ہیں: بلاد افریقہ ، بلاد سوڈان ، قبرص ، طرابلس ، قیروان ، جلولا، قرطاجنہ ، قلعہ کمخ ، قسطنطنیہ، جزیرہ ارواد ، جزیرہ روڈس وغیرہ۔ باقی خراسان ، ترکستان ، کابل ، بخارا ، سمرقند ، بلخ اور طبرستان وغیرہ پر معرکے جاری رہے۔ مفتوحہ علاقوں میں سیدنا امیر معاویہt نے آباد کاری کی داغ بیل ڈالی اور مختلف ممالک میں اسلامی افواج کے لیے چھاونیاں اور مراکز قائم کیے۔ اس سلسلے میں شام کے ساحل پر قلعہ جبلہ ، اسی طرح مرکش ، قیروان،الاذقیہ ، انطرطوس، مرقیہ اور بلنیاس وغیرہ قابل ذکر ہیں۔ اس کے ساتھ ساتھ ہرعلاقے کی اندرونی صورتحال کوجرائم سے روکنے اور پرامن رکھنے کے لیے پولیس کی ضرورت ہوتی ہے۔ آپt نے اس کے بھی پورے انتظامات فرمائے۔ حافظ ابتسام الٰہی ظہیر نے مزید کہا: اصحاب رسولe وہ ہستیاں ہیں کہ جن پر اللہ راضی ہو گیا جنہیں دنیا میں جنت کی بشارتیں دی گئیں۔ جو لوگ فرقہ وارانہ گفتگو کر کے صحابہ کی شان کو کم کرنے کی کوشش کرتے ہیں انہیں اپنے ایمان کی فکر کرنی چاہیے۔ اہل حدیث کا ہر فرد صحابہ کی عظمت اور دفاع کے لیے ہر قسم کی قربانی دے گا۔ حکمران اور سیاستدان سن لیں کہ یہ ملک اہل سنت اور اہل حدیث کی اکثریت کا ملک ہے یہاں کسی اقلیتی گروہ کو مقدس ہستیوں کے خلاف نازیبا الفاظ استعمال کرنے کی اجازت نہیں دی جا سکتی۔ قبل ازیں مبلغین کا اجلاس پروفیسر ساجد میر کی صدارت میں منعقد ہوا جس میں دعوتی اور تبلیغی امور پر تفصیلی مشاورت ہوئی اور طے پایا کہ علماء قرآن وسنت کی روشنی میں عوام کی رہنمائی کریں‘ ہر قسم کے باہمی فاصلے ختم کر کے اپنی صفوں میں اتحاد پیدا کریں۔ اجلاس میں قاری عبدالحفیظ‘ مولانا حنیف ربانی‘ مولانا عبدالستار حامد‘ مولانا عبدالرشید حجازی‘ ڈاکٹر عبدالغفور راشد‘ علامہ ریاض الرحمن یزدانی‘ مولانا سبطین شاہ نقوی‘ مولانا ناصر مدنی‘ مولانا نواز چیمہ‘ مولانا عبدالباسط شیخوپوری‘ حافظ عثمان شاکر‘ مولانا عبدالمنان راسخ‘ مولانا یوسف پسروری‘ مولانا بنیامین عابد‘ مولانا اسحاق اوکاڑوی‘ مولانا یٰسین بلوچ‘ ڈاکٹر ابراہیم سلفی‘ مولانا نعیم بٹ‘ مولانا مشتاق فاروقی‘ صاحبزادہ حافظ بابر فاروق رحیمی ودیگر نے شرکت کی۔
ہدیۂ تبریک
تحریک پاکستان کے سرگرم مجاہد‘ نامور شخصیت اور معروف عالم دین حضرت مولانا محمد رفیق خاں پسروری رحمہ اللہ کی تحریک پاکستان میں گرانقدر اور نمایاں خدمات کے اعتراف پر ایک پروقار تقریب میں صدر پاکستان جناب ڈاکٹر عارف علوی کے ہاتھوں مرحوم کے صاحبزادے ممتاز مصنف‘ کالم نگار اور اسلامی نظریاتی کونسل کے ممبر جناب رانا محمد شفیق خاں پسروری کو گولڈ میڈل ملنے پر تمام احباب جماعت‘ حضرت پسروری مرحوم کے صاحبزادگان حافظ رانا محمد خلیق خاں پسروری‘ رانا محمد عتیق خاں پسروری اور رانا محمد انیق پسروری کو دل کی گہرائیوں سے ہدیۂ تبریک پیش کرتے ہیں۔  (ادارہ)
مرکزی جمعیت اہل حدیث ضلع خوشاب کی تبلیغی سرگرمیاں
میاں بلال طارق سرپرست اور مولانا دلدار عاجز امیر ضلع خوشاب کی سرپرستی میں مارچ ۲۰۱۹ء میں درج ذیل تبلیغی پروگرام منعقد ہوئے:
یکم مارچ کو جامع مسجد صالحین‘ قائد آباد میں استحکام پاکستان کے عنوان پر خطبہ جمعۃ المبارک مولانا حبیب الرحمن یزدانی‘ جامع مسجد محمدی مٹھہ ٹوانہ میں مولانا دلدار عاجز‘ جامع مسجد اہل حدیث بلاک ۱۴ جوہر آباد میں مولانا شکیل اصغر ڈار‘ جامع مسجد اقصیٰ اہل حدیث خوشاب میں قاری عیسیٰ فاروقی‘ جامع مسجد ریاض الجنہ اہل حدیث جوہر آباد میں پروفیسر احسان اللہ فاروقی‘ جامع مسجد حفظانی اہل حدیث خوشاب میں مولانا عبدالحفیظ اکرام نے خطبہ جمعہ ارشاد فرمایا۔
10 مارچ بروز اتوار الفرقان پبلک سکول چک نمبر ۱۲۔ایم بی میں سالانہ امتحان کے موقع پر تقریب تقسیم انعامات کی صدارت ضلعی سرپرست میاں بلال طارق صاحب نے کی۔ اس موقع پر اپنے خطاب میں میاں صاحب نے دور حاضر میں لڑکیوں کی تعلیم کی اہمیت پر زور دیا اور کہا کہ لڑکی کی تعلیم سے ایک گھرانہ سنور جاتا ہے۔ پوزیشن لینے والی طالبات میں میاں صاحب نے بیس ہزار روپے نقد انعامات کی صورت میں تقسیم کیے۔ اس تقریب میں ضلعی رہنما مولانا حبیب اللہ اور قاری عیسیٰ فاروقی نے بھی خطاب کیا۔ یہ تقریب الفرقان پبلک سکول کے ڈائریکٹر اور ضلع خوشاب کے سیاسی امور کے ناظم مولانا حبیب الرحمن یزدانی کی زیر نگرانی منعقد ہوئی۔
21 مارچ بروز جمعرات مسجد اہل حدیث ناڑی جنوبی میں بعد نماز مغرب قاری عیسیٰ فاروقی نے درس قرآن وحدیث دیا۔
23 مارچ بروز ہفتہ صبح دس بجے مرکز مریم بنت عبداللہ ڈیرہ حاجی خیل قائد آباد میں زیر تعلیم طالبات میں تقسیم انعامات کی تقریب منعقد ہوئی۔ یہ ادارہ مرکزی جمعیت اہل حدیث تحصیل قائد آباد کی زیر نگرانی چل رہا ہے۔ سرپرست تحصیل قائد آباد حاجی عبدالرحمن کی بیگم نے انعامات تقسیم کیے اور بیگم مولانا حبیب الرحمن یزدانی نے خطاب اور دعا فرمائی۔
24 مارچ بروز اتوار بعد نماز مغرب مسجد اہل حدیث قاضی کالونی جوہر آباد میں اور اسی دن بعد نماز عشاء مسجد اہل حدیث بلاک ۱۴ جوہر آباد میں قاری عیسیٰ فاروقی صاحب
26 مارچ بروز منگل بعد نماز مغرب جامع مسجد اہل حدیث چک نمبر ۱۴ جوہر آباد میں قاری عبدالوہاب ناظم تحصیل خوشاب
28 مارچ بروز جمعرات بعد نماز عصر جامع مسجد اقصیٰ اہل حدیث خوشاب اور بعد نماز مغرب مسجد رحمن اہل حدیث خوشاب میں مولانا اسامہ جرار‘ بعد نماز عشاء جامع مسجد حفظانی اہل حدیث خوشاب میں مولانا شکیل اصغر ڈار صدر AYF ضلع خوشاب
30 مارچ بروز ہفتہ بعد نماز مغرب جامع مسجد ریاض الجنہ اہل حدیث میں پروفیسر احسان اللہ فاروقی اور بعد نماز عشاء جامع مسجد محمد خوشاب میں مولانا نصر اللہ فاروقی
31 مارچ بروز اتوار جامع مسجد ابوہریرہ اہل حدیث جوہر آباد میں بعد نماز مغرب مولانا عبدالحفیظ اکرم اور بعد نماز عشاء جامع مسجد اہل حدیث رمضان کالونی میں مولانا مقصود عالم نے اصلاحی خطاب فرمایا۔
مرکزی جمعیت اہل حدیث ضلع کوہاٹ کا انتخابی اجلاس
صوبہ KPK کے مرکزی امیر قاری روح اللہ توحیدی نے کوہاٹ کا پہلا دورہ کیا اور ضلع کوہاٹ کی کابینہ کا انتخاب عمل میں لایا گیا۔… مرکزی جمعیت اہل حدیث ضلع کوہاٹ کا انتخابی اجلاس مولانا معراج محمد قریشی صاحب کی سرپرستی میں KPK کے امیر قاری روح اللہ توحیدی‘ نائب امیر مولانا عبدالحمید‘ ڈپٹی سیکرٹری مولانا عمر بن عبدالعزیز‘ رابطہ سیکرٹری محمد ادریس اور صوبائی کابینہ کی موجودگی میں جامع مسجد اہل حدیث چشمہ جات جنگل خیل کوہاٹ میں 13 فروری بروز بدھ 2019ء کو منعقد ہوا۔ جس میں ضلع کوہاٹ کے ارکان مجلس شوریٰ نے بھی شرکت کی۔ صوبائی امیر مولانا روح اللہ توحیدی اور نائب امیر مولانا عبدالحمید صاحب نے مختصر سا خاکہ پیش کرتے ہوئے فرمایا کہ انفرادی طور پر اہل حدیث اپنی اپنی مسجدوں میں قرآن وحدیث بیان کرنے میں سرگرم ہیں لیکن یہ دور اجتماعیت کا دور ہے۔ اسلام اور اہل اسلام کے خلاف سازش کرنے والی قوتیں اکٹھی ہو کر نقصان پہنچانے میں مصروف ہیں۔ حضرت الامیر سینیٹر پروفیسر ساجد میر حفظہ اللہ نے پاکستان میں ہر صوبے کا دورہ کیا اور علماء حضرات سے ملاقاتیں فرمائیں کہ ہم سب مل کر پاکستان میں قرآن وحدیث کا منہج بیان کرنے میں ایک قوت اور ایک جان ہو جائیں تا کہ اجتماعی طور پر قرآن وحدیث کا پیغام گھر گھر گلی گلی تک پہنچایا جا سکے۔ پھر صوبائی امیر نے ضلع مردان میں صوبائی کانفرنس کو کامیاب بنانے کے لیے شرکت کی دعوت دی۔ اس کے بعد ’’شو ہینڈ‘‘ کے ذریعے انتخاب عمل میں لایا گیا۔ ضلع کوہاٹ کی کابینہ:
امیر: مولانا معراج محمد قریشی ٭ نائب امیر: مولانا انور عزیز ٭ ناظم: عبدالسلام ٭ نائب ناظم: لالہ چراغ الدین ٭ ناظم مالیات: عبدالودود اعوان ٭ ناظم تبلیغ: مولانا عبدالقیوم ٭ معاون تبلیغ: مولانا ثناء اللہ ٭ معاون برائے سیاسی امور: گل نواز ٭ ناظم برائے رابطہ کمیٹی: عبدالشکور ٭ ناظم برائے نشر واشاعت: مولانا عبدالعزیز قریشی
منتخب حضرات پر متفقہ طور پر اعتماد کا اظہار کیا گیا اور مبارک باد پیش کی گئی۔ دعائے خیر پر اجلاس اختتام پذیر ہوا۔


No comments:

Post a Comment

View My Stats