پرویز مشرف کے جرائم 08-20 - ھفت روزہ اھل حدیث

تازہ ترین

Friday, February 28, 2020

پرویز مشرف کے جرائم 08-20


پرویز مشرف کے جرائم

سابق فوجی صدر پرویز مشرف کے جرائم کی فہرست بڑی طویل ہے تا ہم اس کے خلاف آئین شکنی اور سنگین غداری کے مقدمے پر خصوصی عدالت نے سزائے موت کا فیصلہ سنایا۔ پھر اس خصوصی عدالت کے فیصلہ کو ہائی کورٹ نے کالعدم قرار دے دیا اور اب پرویز مشرف کو خود عدالت میں پیش ہونے کا حکم دیا ہے۔
اس کو پڑھیں:   فرد قائم ربط ملت سے ہے
\          پرویز مشرف نے ۱۹۹۹ء میں اس وقت کے وزیر اعظم میاں نواز شریف کی حکومت کے خلاف فوجی بغاوت کی تھی جبکہ میاں نواز شریف نے ہی اسے آرمی چیف مقرر کیا تھا۔ پرویز مشرف ۲۰۰۱ء سے ۲۰۰۸ء تک ملک کے صدر بھی رہے۔
\          اس کے دور میں لال مسجد کو شہید کر کے جامعہ حفصہ کی طالبات کی لاشیں رات کے اندھیرے میں ہی کہیں دفنا دیں۔
\          نواب اکبر بگٹی کو دورانِ آپریشن ہلاک کر دیا گیا جس سے بلوچستان میں علیحدگی کی تحریک نے سر اٹھایا۔
\          ۱۲ مئی ۲۰۰۷ء کو کراچی میں ۴۸ اہل وطن ناحق سانحہ پر موت سے دو چار ہو گئے جنہیں اسلام آباد کے جلسہ عام میں طاقت کا مظاہرہ قرار دیا اور اس کی تحقیقات کی ضرورت بھی مناسب نہ سمجھی گئی۔
\          اسلام آباد میں کئی ایک مساجد شہید کی گئیں۔
\          آغا خاں تعلیمی بورڈ قائم کر کے‘ نصاب تعلیم میں تبدیلی کی گئی اور تصور جہاد اور صحابہ کرام] کا تذکرہ خارج کر دیا گیا۔
\          سرکاری سرپرستی میں بسنت کا تہوار شروع کیا۔
\          روشن خیالی کے نام پر اسلامی تصورات وعقائد میں تحریف۔
\          بلوچستان‘ وزیرستان اور سوات میں ملٹری آپریشن۔
\          بے شمار اہل وطن کو اغوا کیا گیا۔
\          افغانستان کی اسلامی حکومت سے بے وفائی اور بے گناہ مسلمانوں کو مروایا گیا۔
\          حدود آرڈینینس کی تنسیخ اور نام نہاد حقوق نسواں بل کی منظوری۔
\          سودی معیشت کا تحفظ ۲۳ جون ۲۰۰۲ء کو وفاقی شرعی عدالت کے اس فیصلہ کو کالعدم قرار دے دیا جس میں بینک انٹرسٹ کو ربا قرار دے کر ملکی معیشت کو سود سے پاک کرنے کا حکم دیا تھا۔
\          نظریہ پاکستان سے انحراف‘ سب سے پہلے پاکستان کہہ کر وطن کو اسلام پر ترجیح دی اور دو قومی نظریہ کی نفی کی۔
\          مجاہدین کے خلاف آپریشن اور انہیں دہشت گرد قرار دیا۔
\          بہت سے اہل وطن کو ڈالر لے کر امریکہ کے حوالے کیا گیا اور امریکہ کے جرائم کی پردہ پوشی کی گئی۔
\          ڈاکٹر عافیہ صدیقی کو امریکی درندوں کے سپرد کیا۔
\          کشمیر کاز کو بے حد نقصان پہنچایا گیا۔
\          کارگل آپریشن میں پسپائی اختیار کر کے جانی ومالی نقصان کیا۔
\          ججز کو گھروں میں نظر بند کیا گیا۔
\          ملک کو امریکہ کا دست نگر بنا دیا۔ اس کی ایک ٹیلیفون کال پر اس کی تمام شرائط تسلیم کر لیں۔ یہاں تک کہ امریکہ کو وطن عزیز میں ڈرون حملے کرنے کی اجازت دے دی۔
پرویز مشرف کے جرائم اور بھی بہت ہیں مگر اس کا تذکرہ یہاں ختم کرتے ہیں اسے اپنے جرائم کی سزا ضرور ملنی چاہیے۔


No comments:

Post a Comment

Pages