تبصرۂ کتب 08-20 - ھفت روزہ اھل حدیث

تازہ ترین

Friday, February 28, 2020

تبصرۂ کتب 08-20


تبصرۂ کتب

تبصرہ نگار: جناب حافظ محمد اسلم شاہدروی
نام کتاب:               فضل الباری (اردو)
تالیف:                    پروفیسر ڈاکٹر فضل الٰہی d
ضخامت:                 368 صفحات،         میڈیم سائز
قیمت:                 630  روپے
ناشر:                    دار النور ۔ اسلام آباد:  03355666876
تبصرہ نگار:               جناب حافظ محمد اسلم شاہدرویd
                                معاون ناظم طبع وتالیف مرکزی جمعیۃ پنجاب
امیر المؤمنین فی الحدیث حضرت امام محمد بن اسماعیل البخاریa (۱۹۴ھ - ۲۵۶ھ) کی مایہ ناز تصنیف الجامع الصحیح المعروف بہ صحیح بخاری شریف کو اللہ تعالیٰ کی کتاب قرآن پاک کے بعد سب سے صحیح کتاب ہونے کا اعزاز حاصل ہے۔
ہزاروں افراد نے مؤلف کی زندگی میں ان سے بلاواسطہ یہ کتاب پڑھی‘ ان کے بعد سے آج تک اس کتاب کے لفظ بلفظ پڑھنے اور پڑھانے کا سلسلہ جاری ہے۔
جب اس کتاب کی تکمیل ہوتی ہے تو اس کی آخری حدیث شریف پر علماء کرام کے خصوصی دروس کا اہتمام کیا جاتا ہے۔ ان دروس میں آخری باب کی وضاحت بھی کی جاتی ہے۔ یہ باب اور حدیث شریف بہت سے فوائد اور علمی نکات پر مشتمل ہے۔
جناب ڈاکٹر فضل الٰہی صاحب کئی کتابوں کے مؤلف ہیں‘ ان کی کتب کی تعداد تین درجن سے زائد ہے اور متعدد زبانوں میں شائع شدہ ہیں۔
مؤلف کا طریقہ تالیف عالمانہ اور فاضلانہ کے ساتھ ساتھ ناصحانہ بھی ہے۔ ان کے ہاں علمی وسعت اور پختگی کی بہتات ہے۔ انہیں صحیح بخاری شریف کی آخری حدیث پر درس کے لیے متعدد اداروں میں بلایا جاتا ہے۔ اس لیے اپنے اس بیان کردہ موضوع کو بہت عمدگی سے وہ ضبط تحریر میں لائے ہیں۔
اس کو پڑھیں:    القواعد الفقہیہ
موصوف کو سعودی عرب اور پاکستان کی جامعات/ یونیورسٹیوں میں پڑھانے کا موقع بھی میسر رہا ہے‘ اس لیے یہ کتاب عمدہ انداز تدریس کا مظہر بھی ہے۔ اس کتاب کا پہلا باب حضرت امام کے سوانح پر مشتمل ہے۔ یہ باب بھی خاصا وسیع ہے اور بہت خوبی سے امام بخاریa کی سیرت کا احاطہ کرتا ہے۔
علماء‘ طلبہ‘ عوام الناس اور بالخصوص صحیح بخاری پڑھنے اور پڑھانے والوں کی خدمت میں اس کتاب کے مطالعہ کی گذارش اور سفارش کی جاتی ہے۔ اللہ تعالیٰ اس کتاب کو مؤلف کی حسنات میں شامل فرمائے۔ آمین!

نام کتاب:               فیضان قرآن
تالیف:                    حمید اللہ خان عزیز d
ضخامت:                  216 صفحات،   میڈیم سائز
قیمت:                      مذکور نہیں
ناشر:                        ادارہ تفہیم الاسلام احمد پور شرقیہ ضلع بہاولپور فون:  0333-6357567
تبصرہ نگار:               جناب حافظ محمد اسلم شاہدرویd
اس کو پڑھیں:   حُجیت حدیث مصطفیٰﷺ
قرآن پاک اللہ تعالیٰ کی آخری کتاب ہے جو رہتی دنیا تک کی انسانیت کے لیے مشعل راہ ہے‘ ہدایت‘ نور‘ کامیابی اور کتاب انقلاب ہے۔ قرآن پاک کے متعدد فضائل اور اسے پڑھنے والوں کے کئی طرح کے اجر وثواب خود آیات قرآنیہ اور احادیث مبارکہ میں مذکور ہیں۔ اس پاک کتاب کی خدمت کی سعادت اس دار فانی کے بسنے والے کئی افراد کے حصے میں آئی ہے۔ یہ بات بھی طے ہے کہ اس کے علوم ومعارف کے تنوع اور کثرت کے باوصف اس کے متعلق خدمات بھی گوناں گو ہیں۔
زیر تبصرہ کتاب ہمارے فاضل دوست جناب حمید اللہ خاں عزیز کے قلم گوہر بار سے نکلے الفاظ وعبارات کا حسین مرقع ہے۔ موصوف پہلے سے کئی تاریخی کتب لکھ کر شائع کر چکے ہیں۔ ان کی دلچسپی کا خاص موضوع تو شخصیات اور علاقہ جنوبی پنجاب ہے تا ہم ان کے قلم کی جولانگاہ وسیع ہے۔
فیضانِ قرآن میں مؤلف نے آسان‘ رواں اور شستہ اردو میں قرآن پاک کے فیضان کی چند صورتیں پیش کی ہیں‘ اس کے نمایاں مضامین میں قرآن مجید ایک کامل ضابطۂ حیات‘ قوموں کے زوال کی داستان‘ قرآن مجید کے چار حقوق‘ قرآن مجید میں دعوت وتبلیغ کا حکم‘ قرآن اور حاملین قرآن چند سورتوں کے فضائل‘ قرآن مجید کی اثر انگیزی‘ متنازعہ مسائل اور قرآنی احکام ہیں۔ جبکہ شہ سرخیوں کی ذیلی سرخیاں سینکڑوں عنوانات پر مشتمل ہیں۔
اس کو پڑھیں:   حجیت حدیث مصطفیٰ ﷺ (٢)
قرآن پاک کلام الٰہی ہے‘ اس کے علوم کی وسعت اور بہتات ہے‘ اس لیے کوئی لکھنے والا اس کے متعلق لکھنے کا حق کیونکر ادا کر سکتا ہے؟ لیکن جناب حمید اللہ خاں عزیز نے جو لکھا ہے نہایت واضح‘ با مقصد اور تفہیم کے لیے نہایت آسان ہے۔
کتاب کی کمپوزنگ‘ کاغذ‘ جلد سب عمدہ ہیں۔

نام کتاب:               جزء قراء ۃ خلف الامام
تالیف:                    امام بخاریa
ترجمہ‘ تحقیق وفوائد: مولانا امان اللہ عاصم
ضخامت:                  424 صفحات،   میڈیم سائز
قیمت:                      مذکور نہیں
ناشر:                        دار الابلاغ‘ اردو بازار‘ لاہور  0300-4453358
تبصرہ نگار:               جناب حافظ محمد اسلم شاہدرویd
اس کو پڑھیں: 
نماز اللہ اور بندے کے ما بین تعلق کا اعلیٰ مظہر ہے‘ نماز دین کا ستون ہے اور نماز کا ستون سورۂ فاتحہ ہے۔ صحیح مسلم شریف کی حدیث قدسی میں ہے: ’’میں نے نماز کو اپنے اور اپنے بندے کے درمیان تقسیم کر دیا ہے۔… الحدیث۔
اس اجمال کی تفصیل میں خود ہی جو ارشاد فرمایا‘ اس کے مطابق سورۂ فاتحہ ہی نماز ہے اور اس کے بغیر نماز نہیں ہوتی۔ اس سے نہ ہونے کے لیے لا نفی جنس کا استعمال فرمایا گیا ہے جو اپنے احاطے میں آنے والی بات کی ہر طرح نفی کر دیتا ہے۔
امیر المؤمنین فی الحدیث حضرت امام بخاریa (۱۹۴ھ - ۲۵۶ھ) نے تالیف اور جمع حدیث کے مبارک عمل سے امت مسلمہ پر بڑا احسان کیا ہے‘ ان کی تالیفات اسلام کی تعلیمات کا اعلیٰ مظہر اور مقبول خلائق ہیں۔
جزء رفع الیدین کی طرح حضرت امام نے جزء القراء ۃ بھی الگ سے مرتب فرمایا‘ اس میں اپنی سندوں سے دو سو پانچ (۲۰۵) احادیث جمع کر دی ہیں جن میں مقتدی کے لیے نماز میں قراء ت کی اہمیت اور امام کی اقتداء میں بالخصوص جہری نمازوں میں بھی مقتدی کے لیے سورۂ فاتحہ پڑھنے کا وجوب ذکر فرمایا ہے۔ یہ اس موضوع پر اولین اور جامع کتاب ہے۔
اس کتاب پر تحقیق وتراجم کے متعدد علمی کام ہوئے ہیں‘ اس پر ایک تحقیق میرے استاد محترم مولانا فیض الرحمن ثوری کی بھی شائع شدہ ہے۔
زیر تبصرہ ترجمہ تحقیق اور فوائد کا کام میرے قابل فخر شاگرد امان اللہ عاصم شیخوپوری کے قلم سے شائع ہوا ہے‘ وہ اس سے پہلے بیسیوں کتب پر ایسے علمی کام کر چکے ہیں اور ان کی علمی خدمات تقریبا سب شائع شدہ ہیں۔
محقق نے تحقیق وتخریج میں بہت محنت کی ہے اور ان کا یہ کام عالمی معیار کا ہے۔ ترجمہ بھی نہایت عمدہ‘ رواں اور عام فہم ہے۔
یہ کتاب علمی خوبیوں کے ساتھ ساتھ کمپوزنگ‘ کاغذ‘ جلد وغیرہ کی ظاہری خوبیوں سے بھی بھر پور ہے۔ اللہ تعالیٰ اس کتاب کا نفع عام فرمائے۔ آمین!


No comments:

Post a Comment

Pages