منزل کی تمنا ہے تو کر جہد مسلسل 10-20 - ھفت روزہ اھل حدیث

تازہ ترین

Tuesday, March 10, 2020

منزل کی تمنا ہے تو کر جہد مسلسل 10-20


منزل کی تمنا ہے تو کر جہد مسلسل

سینئر نائب ناظم اعلیٰ مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان مولانا محمد نعیم بٹ ڈسکہ‘ ضلع سیالکوٹ میں
مرکزی جمعیۃ اہل حدیث ضلع سیالکوٹ نے اپنے اہداف ترتیب دیئے ہیں جو اپنے وقت میں ان شاء اللہ پورے کیے جائیں گے۔ ان کو پایۂ تکمیل تک پہنچانے کے لیے ابتداء کر دی گئی اور کئی شعبوں کا آغاز ہو چکا جس کی ایک کڑی اظہار یکجہتی کشمیر سیمینارز بھی ہیں جس کے لیے ضلع کی تمام تحصیلوں میں پروگرام کیے گئے۔
۴ فروری کو تحصیل ڈسکہ کا پروگرام جامع مسجد حبیب اللہ میں منعقد کیا گیا جس میں چیئرمین کشمیر کمیٹی مرکزی جمعیۃ اہل حدیث پاکستان مولانا محمد نعیم بٹ کی خصوصی آمد ہوئی جبکہ اس موقع پر امیر ضلع مولانا عبدالحفیظ مظہر اور ناظم ضلع قاری مزمل الدین نے بھی شرکت کی۔ نماز مغرب کے بعد پروگرام کا آغاز تلاوت قرآن مجید سے کیا گیا۔ آزادی کشمیر پر ایک خوبصورت نظم کے بعد ناظم ضلع قاری مزمل الدین نے مرکزی جمعیۃ اہل حدیث ضلع سیالکوٹ کے اہداف پر گفتگو کی جس کو شرکائے سیمینار نے بے حد سراہا اور داد دی۔ اس کے ساتھ ساتھ انہوں نے آزادی کشمیر کے لیے اپنے جذبات کا اظہار بہت خوبصورت انداز میں کیا اور مولانا محمد نعیم بٹ کو ہاؤس سے مخاطب ہونے کی دعوت دی۔ انہوں نے خطبہ مسنونہ‘ تعریفات الٰہی اور حضور نبی کریمe کی ذات اقدس پر درود شریف کے بعد مسلک اہل حدیث کی حقانیت‘ جہاد کی فضیلت اور آزادی کی اہمیت پر مختصر مگر جامع گفتگو کی۔ مجاہدین کشمیر‘ مظلوم کشمیریوں کی قربانیوں کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ آج کشمیری مسلمان پاکستانی جھنڈے کا کفن لے کر دفن ہو رہے ہیں اور کشمیری مسلمانوں نے سرینگر‘ شوپیاں‘ کپواڑہ‘ اننت ناگ‘ سوپورہ‘ بانڈی پورہ اور پلوامہ وغیرہ پر سبز ہلالی پرچم لہرا کر پاکستان سے محبت کا اظہار کر دیا ہے۔ اقوام متحدہ اس جذبے کا اظہار دیکھ کر اپنی پاس شدہ قرار دادوں پر عمل کرائے۔ مولانا محمد نعیم بٹ نے حکومت پاکستان سے مطالبہ کیا کہ فرائض کی انجام دہی احسن انداز میں کر کے سفارتی ذمے داریوں کو پورا کرتے ہوئے بین الاقوامی سطح پر کامیابی حاصل کرے۔ چیئرمین کشمیر کمیٹی مرکزی جمعیۃ اہل حدیث کے امیر حضرت علامہ پروفیسر ساجد میر اور اپنے دورہ کشمیر کا تذکرہ بھی کیا۔ مسلمانوں کی حالت زار پر تبصرہ کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ دنیا کے جغرافیہ پر ہر جگہ مسلمان شکار ہے اور غیر مسلم شکاری ہے۔غزال ایک ہی ہے مسلمان اور شکاری مختلف ہیں۔ یہ حالات تب بدلیں گے جب پوری دنیا کی مسلم قوتیں مکمل یگانگت‘ یکجہتی‘ اتفاق واتحاد کا مظاہرہ کریں گی۔ انہوں نے شرکاء کے سیمینار سے پر زور اپیل کی کہ مرکزی جمعیۃ اہل حدیث سے بھر پور تعاون اپنا فرض سمجھیں اور صلاحیتیں بروئے کار لائیں۔ امیر ضلع مولانا عبدالحفیظ مظہر کی دعائے خیر پر پروگرام اختتام پذیر ہوا جو کہ انتہائی خوبصورت تھا۔


No comments:

Post a Comment

Pages