مرکزی جمعیۃ اہل حدیث پنجاب .. رواں دورانیے کا آخری اجلاس 11-20 - ھفت روزہ اھل حدیث

تازہ ترین

Friday, March 13, 2020

مرکزی جمعیۃ اہل حدیث پنجاب .. رواں دورانیے کا آخری اجلاس 11-20


مرکزی جمعیۃ اہل حدیث پنجاب .. رواں دورانیے کا آخری اجلاس

رپورٹ: جناب مولانا ابرار احمد ظہیر
مرکزی جمعیت اہلحدیث پاکستان کے تنظیمی سیٹ اپ کا موجودہ دورانیہ اپنے اختتامی لمحات کی طرف بڑھ رہا ہے۔ ضلعی وشہری انتخابات تقریباً مکمل ہوچکے ہیں۔ اب مرکزی انتخابات ہونے والے ہیں۔ مرکزی انتخابات کے ساتھ ہی صوبائی تنظیمیں تحلیل ہوجائیں گی۔ پنجاب کا تنظیمی سیٹ اپ بھی انہی مراحل کی طرف بڑھ رہا ہے۔ اس سلسلے میں مورخہ ۲۳ فروری ۲۰۲۰ء کو مولانا محمد نعیم بٹ حفظہ اللہ کی سرپرستی، امیر پنجاب پروفیسر حافظ عبدالستار حامد حفظہ اللہ کی صدارت اور مولانا عبدالرشید حجازی حفظہ اللہ کی نظامت میں مرکز اہلحدیث لاہور میں اراکین کابینہ وعاملہ کا بھر پور اجلاس ہوا۔ اجلاس کا آغاز تلاوت قرآن مجید سے ہوا۔ تلاوت کے بعد سابقہ اجلاس کی کاروائی مولانا طارق جاوید نے پڑھ کر سنائی جس کی ہاؤس کی طرف سے مکمل تائید کے بعد صدر اجلاس امیر پنجاب نے اس کی توثیق فرمائی۔
ناظم اعلیٰ پنجاب مولانا عبدالرشید حجازی حفظہ اللہ نے مائیک امیر پنجاب پروفیسر حافظ عبدالستار حامد حفظہ اللہ کو دیا جنہوں نے مختصر وقت میں انتہائی جامع انداز میں پنجاب کی پانچ سالہ کارکردگی بیان فرمائی۔ تنظیمی اجلاسوں کا ذکر ہوا تو ساتھ صوبہ بھر کے تمام اضلاع کے تنظیمی دوروں کا بھی تذکرہ ہوا۔ امیر پنجاب نے فرمایا کہ ہم نے صوبائی نظم کیلئے جو کچھ بھی کیا سب آپ کی مشاورت اور تعاون سے کیا۔ اس کیلئے میں آپ سب ارکان کابینہ وعاملہ کا شکر گزار ہوں۔ انہوں نے سابق ناظم پنجاب مولانا میاں محمود عباسؒ کی خدمات کا شاندار الفاظ میں تذکرہ کیا۔
پھر انہوں نے موجودہ ناظم اعلیٰ پنجاب جناب مولانا عبد الرشید حجازی کے بطور ناظم اعلیٰ پنجاب بننے کی بات کی تو اپنے بڑے پن کا مظاہرہ کرتے ہوئے انہیں اپنا بڑا بھائی اور خود سے سینئر قراردیا۔ ان کی خدمات کو خراج عقیدت پیش کیا اور مختصر ترین دور نظامت میں پنجاب جمعیت کیلئے ان کی شاندار خدمات کو خراج تحسین پیش کیا۔امیر پنجاب نے ہر ہر رکن کابینہ وعاملہ کی وفاؤں‘ دعاؤں‘ نیک تمناؤں اور تعاون علی البر پر ان کا دل کی گہرائیوں سے شکریہ ادا کیا۔
ازیں بعد ناظم اعلیٰ پنجاب مولانا عبد الرشید حجازی حفظہ اللہ نے اپنے دور نظامت کی کارگزاری‘ مختلف اضلاع کے تنظیمی دوروں کی رپورٹ ہاؤس میں پیش کی۔ انہوں نے بھی تمام اراکین کابینہ وعاملہ کا تعاون ومعاونت پر دلی شکریہ ادا کیا۔
چونکہ ناظم مالیات پنجاب مولانا مبشر احمد مدنیd ناسازی طبع کے باعث شریک اجلاس نہ ہو سکے تھے لہٰذامالیاتی رپورٹ بھی جناب ناظم اعلیٰ پنجاب نے پیش فرمائی۔ صاف وشفاف مالیاتی رپورٹ پیش پر ہر شریک اجلاس نے بے حد سراہا۔
سرپرست پنجاب و مرکزی سینئر نائب ناظم اعلیٰ مولانا محمد نعیم بٹd نے اجلاس کے آخر میں اپنے مخصوص انداز میں صوبائی امیر وناظم سمیت کابینہ وعاملہ کے تمام معزز ارکان کی جہود طیبہ کا شکریہ ادا کیا اور دعا کی کہ اللہ پاک یہ ساری کاوشیں اپنی رضا کیلئے قبول فرما لے۔
دیگر امور میں تمام ارکان کابینہ نے قائدین پنجاب کی خدمات کو زبردست الفاظ میں خراج تحسین پیش کیا۔
راقم الحروف نے باقاعدہ ایک قرارداد کے ذریعے قائدین پنجاب کی خدمات کو خراج تحسین پیش کیا تو ہاؤس نے پرجوش انداز میں تائید کی۔ اجلاس کا اختتام حافظ ظفر اللہ کی دعائے خیر سے ہوا۔ اجلاس میں مولانا بہادر علی سیف‘ قاری عصمت اللہ ظہیر‘ حافظ محمد یوسف پسروری‘ پروفیسر محمد سعید کلیروی‘ حافظ عبدالرزاق‘ مولانا ابوالاحتشام امیر حمزہ طور‘ حافظ عبدالغفار نقیب‘ مرزا سلیم احمد‘ مولانا محمد شفیع‘ ڈاکٹر محمد ابراہیم سلفی‘ ڈاکٹر شہباز حسن‘ محمد طاہر شیخ‘ قاری محمد عزیر‘ مولانا احتشام الحق بھوپال‘ حافظ عبدالغفور‘ مولانا مشتاق احمد فاروقی‘ رانا ابراہیم نفیس‘ مولانا محمد اسلم جوئیہ‘ پروفیسر ڈاکٹر حمود لکھوی‘ مولانا عبدالغفور‘ حکیم محمد سلیمان اظہر‘ مولانا تنویر احمد فاروقی‘ مولانا عنایت اللہ رحمانی‘ قاری سیف اللہ عابد‘ شوکت ضیاء چوہدری‘ حافظ مسعود اظہر‘ حافظ اشتیاق‘ ابومحمد عبدالستار‘ قاری یٰسین یزدانی‘ حافظ احمد یار صدیقی‘ مولانا عمر فاروق لکھوی‘ حافظ شفیق الرحمن‘ سید عبدالغفار شاہ‘ ڈاکٹر محمد امین اظہر‘ حافظ عالمگیر‘ مولانا محمد اکرم شاکر‘ مولانا اسحاق خادم قصوری‘ مولانا اسماعیل ساجد‘ قاری عبدالغفور عابد‘ قاری عبیداللہ انور‘ قاری عبدالحمید صدیقی‘ ڈاکٹر انصر جاوید گھمن ودیگر نے شرکت کی۔


No comments:

Post a Comment

Pages