بڑھے چلو ... 20-25 - ھفت روزہ اھل حدیث

تازہ ترین

Friday, November 06, 2020

بڑھے چلو ... 20-25

ھفت روزہ اھل حدیث, بڑھے چلو, اداریہ,


بڑھے چلو ...!

 

گذشتہ کچھ عرصہ سے مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان کی مرکزی‘ صوبائی اور ضلعی جمعیتوں میں ایک تحریک نظر آ رہی ہے۔ ولولۂ تازہ اور جد وجہد کے نمایاں اثرات دیکھنے کو مل رہے ہیں جو بہرصورت نہایت خوش آئند ہیں۔

مرکزی جمعیت کی ذیلی تنظیمات نے بھی اس سے اچھا اثر لیتے ہوئے اور اپنی ذمہ داریوں کا احساس کرتے ہوئے تنظیم اور تحریک میں اضافہ کیا ہے جو خوش آئند ہے۔

یہ پڑھیں:              مدیر اعلیٰ کی یاد میں تعزیتی ریفرنس

اگر ہم صوبہ وار جائزہ لیں تو صوبہ خیبر پختونخواہ (KPK) کا ایک صوبائی اجلاس پشاور میں ہوا جس میں صوبہ بھر کے نمایاں علماء اور اراکین نے شرکت کی۔ پھر پشاور اور صوبہ میں جو کبار علماء ہیں ان کے بیٹوں کا مرکزی جمعیت اہل حدیث کے موقف کو قبول کر کے عملاً اس کی جد وجہد کا حصہ بننا خوش کن امر ہے۔ اس صوبے میں ایک بہت بڑا نمائندہ اجتماع ہزارہ میں بھی ہوا۔ ان دونوں خالص تنظیمی اجلاسوں میں ناظم اعلیٰ جناب سینیٹر ڈاکٹر حافظ عبدالکریمd نے شرکت کی اور انہوں نے صوبائی جمعیت کی تنظیمی کاوشوں کو سراہا اور حوصلہ افزاء قرار دیا۔

صوبہ سندھ اور عروس البلاد کراچی میں صوبائی اور شہری جمعیت نے سلفی منہج کی نشر واشاعت کے لیے دیگر تنظیموں کے اشتراک سے اہل حدیث ایکشن کمیٹی کو بہت فعال کیا ہے۔ اس کے نتیجے میں ہم نے وہاں دوسرے مسالک کے اشتراک سے تحفظ ناموس صحابہ] کی بے مثال ریلیاں منعقد کیں۔ پھر صرف اہل حدیث کی الگ اور بہت بڑی ریلی نے کراچی اور سندھ کے شہریوں کو بہت اچھا تاثر دیا۔ ان ریلیوں کے بعد تحفظ شعائر اسلام کے نام سے بڑے پروگرام کیے گئے جن میں امیر محترم اور دیگر ذمہ داران نے شرکت کی اور ان سب سے بڑھ کر PDM کے کراچی میں ہونے والے بہت بڑے جلسے میں جماعت کی نمائندگی اور شرکت نمایاں تھی۔

صوبہ بلوچستان میں صوبائی اور کوئٹہ کی شہری جمعیت بھی تبلیغ دین اور جماعتی نقطۂ نظر کے ابلاغ میں متحرک ہے اور PDM کے کوئٹہ والے جلسے میں امیر محترم کا بیان اور اس کے علاوہ تحفظ شعائر اسلام کے پروگرام نہایت اہمیت کے حامل ہیں۔ PDM کے متعدد اجلاس صوبائی جمعیت کے دفتر میں ہمارے زیر انتظام بلکہ زیر امامت ہوئے۔

جس طرح صوبہ پنجاب ہماری آبادی اور وسائل کے لحاظ سے سب سے بڑا صوبہ ہے اسی طرح یہاں جماعتی سرگرمیاں بھی زیادہ ہیں۔ الحمد للہ! پنجاب میں ملتان کا تحفظ ناموس صحابہ کا مشترکہ پروگرام ہماری تنظیم اور تحریک کی کامیابی کا خاص پہلو اپنے اندر سموئے ہوئے تھا۔

اس کے بعد فیصل آباد کی قدیم ترین مسجد اہل حدیث امین پور بازار کی تعمیر نو کے بعد امیر محترم کا خطبہ جمعہ اور پھر جمعہ کے فورا بعد ’’تحفظ ناموس صحابہ‘‘ کی عظیم الشان ریلی سے امیر محترم وقائدین کے خطابات ہماری تحریک کا بڑا مظہر ہیں۔ فیصل آباد شہر اور گرد ونواح سے گویا انسانوں کا سیلاب اُمڈ آیا تھا۔ اس میں سب کی محنتیں قابل ذکر ہیں لیکن سب سے نمایاں جد وجہد مجاہد انتھک جناب مولانا عبدالرشید حجازیd نے فرمائی جو امیر صوبہ اور امیر ضلع بھی ہیں۔ اللہ تعالیٰ سب کو جزائے خیر دے۔

گوجرانوالہ ہمیشہ کی طرح ان تحریکی ایام میں کسی سے پیچھے نہ رہا۔ شہری اور ضلعی جمعیت نے شاندار تحفظ ناموس صحابہ ریلی منعقد کی اور پھر PDM کے بہت بڑے جلسے کے انتظام وانعقاد کے لیے اپنی میزبانی میں سیاسی ومذہبی جماعتوں کے قائدین سے وسیع مشاورت جاری رکھی۔ اس جلسے میں ہماری جماعت کا کردار نمایاں نظر آیا۔ گوجرانوالہ سٹی کی جماعت نے ہفت روزہ ’’اہل حدیث‘‘ کے مرحوم مدیر اعلیٰ جناب محمد بشیر انصاریa کی خدمات کو خراج تحسین پیش کرنے کے لیے بھی ایک باوقار تقریب منعقد کی۔

یہ پڑھیں:              سیرت کا پیغام

اقبال اور میر کا شہر استقلال سیالکوٹ بھی عملی جد وجہد میں بہت نمایاں نظر آیا کہ یہاں پر اجتماعی طور پر ایک بڑے خطبہ جمعہ کے اجتماع کے بعد ایک بہت بڑی ریلی نکالی گئی جو اس شہر کی تاریخی ریلی تھی۔ اس ریلی سے بھی امیر محترم اور قائدین نے خطابات فرمائے اور یہیں سے قافلے PDM کے جلسے کے  لیے سوئے گوجرانوالہ بڑھے۔

وفاقی دار الحکومت اسلام آباد اور راولپنڈی کی جمعیتوں نے بھی تحفظ ناموس صحابہ کے ایک مشترکہ تاریخی جلوس میں اپنا بہت بڑا اور نمایاں حصہ شامل کیا۔

لبرلزم کے دلدادگان خصوصا مادر پدر آزاد معاشرے کی داعی چند مفاد پرست آنٹیوں کے خلاف مرکزی جمعیت اہل حدیث شعبہ خواتین کی باپردہ ماؤں بہنوں نے گوجرانوالہ اور فیصل آباد میں جلوس نکالے اور بتایا کہ یہ خواتین کے حقوق کے لیے نہیں نکلیں بلکہ ان کے حقوق کے تحفظ کے لیے اسلامی ہدایات کی روشنی میں ہم جد وجہد کر رہی ہیں۔

اہل حدیث یوتھ فورس پاکستان کی تحریک ملک بھر میں جاری ہے۔ پنجاب کی صوبائی تنظیم نے مرکز اہل حدیث ۱۰۶ راوی روڈ لاہور میں ’’تحفظ شعائر اسلام‘‘ کے نام سے حاضری ومقررین کی کثرت کے لحاظ سے ایک بے مثال پروگرام منعقد کیا۔ اس پروگرام نے نہ صرف پنجاب میں بلکہ ملک بھر میں ایسے پروگراموں کی ایک نئی طرح ڈال دی ہے جو اہل حدیث نوجوانوں کے جذبوں اور ولولوں کو تازگی بخش رہی ہے۔

جمعیۃ اساتذہ پاکستان صوبوں کے بعد اضلاع‘ تحیصلوں اور مقامی یونٹوں تک بڑی تیزی سے مقبول اور فعال ہو رہی ہے۔ اس کے اکابرین اور ذمہ داران قوم کے نونہالوں کی تعلیمی رہنمائی کے ساتھ ساتھ جماعتی‘ مسلکی اور تنظیمی رہنمائی کا فریضہ بھی بہت کامیابی سے ادا کر رہے ہیں۔ انہوں نے بھی اجتماعات‘ تنظیمی اور تبلیغی دوروں سے جماعتی کاز کو تقویت دینے کی بھر پور کوشش جاری رکھی ہے۔

جمعیۃ طلبہ اہل حدیث مدارس میں تنظیمی روح پھونکنے میں مستعد ہے۔ اس میدان میں کامیابی کے لیے اس نے تقریری مقابلوں ا آغاز کیا ہے جو ملک بھر کے مدارس میں متعدد مقامات پر ہو چکے ہیں اور کئی مقامات پر آئندہ ہوں گے۔

اہل حدیث سٹوڈنٹس فیڈریشن‘ حکماء محاذ‘ وکلاء محاذ ودیگر ذیلی تنظیمات اپنی اپنی بساط کے مطابق اس حق کو پھیلانے اور لوگوں تک پہنچانے میں پوری طرح کوشاں ہیں جو اللہ تعالیٰ نے اپنے آخری نبی حضرت محمد مصطفیe کے ذریعے ہم تک پہنچایا اور جسے پہنچانے کے لیے علماء کو انبیاء کا وارث قرار دیا۔

یہ پڑھیں:             اپوزیشن کی اے پی سی

تو اے وارثانِ انبیاء! آپ کی تحریک‘ آپ کا اُٹھنا‘ آپ کی جد وجہد آپ کی تبلیغی کاوش‘ آپ کی تنظیمی سعی جمیل یہ سب کچھ بہت عمدہ اور قابل قدر ہے۔ گذارش اور یاددہانی ہے کہ اب جب یہ قدم اُٹھے ہیں اور بڑھتے جا رہے ہیں تو یہ نہ ڈگمگائیں اور نہ رکنے پائیں۔ بڑھے چلو … بڑھے چلو … بڑھے چلو۔

 

No comments:

Post a Comment

Pages